انٹرنیشنل

عالمی ادارہ صحت پر ٹرمپ کی تنقید ٹھیک نہیں:اقوام متحدہ

امریکی صدرکاامداد بند کرنے کاانتباہ،ڈبلیو ایچ او، ڈاکٹر ٹیڈروس کی سربراہی میں کووڈ کے حوالے سے بہترین کام کررہا ہے:ترجمان یواین او

 

نیویارک (ویوزنیوز)اقوام متحدہ کے ترجمان سٹیفن ڈوجرک نے ڈبلیو ایچ او پر امریکی صدر ٹرمپ کی تنقید کو مسترد کردیا، انہوں نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ’سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس کے لیے یہ واضح ہے کہ ڈبلیو ایچ او، ڈاکٹر ٹیڈروس کی سربراہی میں کووڈ کے حوالے سے بہترین کام کررہا ہے، مدد فراہم کرنے والے ممالک سے لاکھوں کی تعداد میں آلات حاصل کیے گئے ہیں جبکہ دیگر ممالک کو ٹریننگ اور عالمی گائیڈ لائنز فراہم کی گئی ہیں‘۔انہوں نے کہا کہ ڈبلیو ایچ او نے حال ہی میں کانگو میں ایک متعدی مرض ایبولا اور اکثر مہلک بیماری سے نمٹنے کے لیے اپنے عملے کو صف اول پر کھڑا کرنے میں ’زبردست کام‘ کیا ہے۔ڈبلیو ایچ او نے ٹرمپ کے ریمارکس پر تبصرہ کرنے کے لیے رائٹرز کی درخواست کا کوئی جواب نہیں دیا۔قبل ازیںامریکی صدر نے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) پر کڑی تنقید کرتے ہوئے الزام لگایا کہ وہ چین پر بہت زیادہ توجہ مرکوز کررہے ہیں اور ساتھ ہی خبردار کیا کہ وہ اس ایجنسی کے لیے امریکی مالی اعانت پر پابندی لگائیں گے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ’واقعی ڈبلیو ایچ او نے اسے تباہ کردیا‘۔انہوں نے کہا کہ ’کسی وجہ سے، بڑے پیمانے پر امریکا کے ذریعہ ادارے کو مالی اعانت فراہم کی جاتی ہے، اس کے باوجود ان کا جھکاو¿ چین کی جانب بہت زیادہ ہے، ہم اسے اچھی طرح سے دیکھیں گے‘۔
انہوں نے کہا کہ ’خوش قسمتی سے میں نے چین کے لیے اپنی سرحدوں کو کھلا رکھنے سے متعلق ان کے مشورے کو مسترد کردیا، انہوں نے ہمیں ایسی ناقص سفارش کیوں دی؟‘بعد ازاں وائٹ ہاو¿س کی نیوز بریفنگ میں ٹرمپ نے اقوام متحدہ کی صحت کی تنظیم کے خلاف لگائے جانے والے الزامات کو دہرایا۔امریکی صدر نے کہا کہ ’انہوں نے اسے غلط کہا، انہوں نے واقعی ایسا کیا، انہوں نے کسی کی بھی نہیں سنی، ہم ڈبلیو ایچ او پر خرچ کی جانے والی رقم پر قابو پالیں گے، ہم اس پر ایک بہت طاقتور گرفت رکھتے ہیں اور ہم اس سے متعلق نظر ثانی کرنے جارہے ہیں‘۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button