انٹرنیشنل

کورونا وائرس کے خلاف ویکسین ستمبر تک تیار ہوجائے گی: برطانوی سائنسدان

 

لندن(ویوز نیوز)ویسے تو اکثر سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ نئے نوول کورونا وائرس کے خلاف ویکسین کی تیاری میں ایک سے ڈیڑھ سال کا عرصہ لگ سکتا ہے۔مگر برطانیہ کی اہم ترین یونیورسٹی کی تحقیقی ٹیم کی قیادت کرنے والی سائنسدان کے مطابق کورونا وائرس کے خلاف ویکسین ستمبر تک تیار ہوجائے گی۔آکسفورڈ یونیورسٹی کی ویکسینولوجی کی پروفیسر سارہ گلبرٹ نے دی ٹائمز آف لندن کو بتایا کہ وہ ’80 فیصد پراعتماد’ ہیں کہ ان کی ٹیم کی تیار کردہ ویکسین کام کرے گی اور ستمبر تک تیار ہوجائے گی۔
ماہرین اس سے پہلے کہہ چکے ہیں کہ عام طور پر ویکسینز کی تیاری کا عمل برسوں میں مکمل ہوتا ہے اور بہت زیادہ تیزی سے بھی کام کیا جائے تو بھی کورونا وائرس کے لیے ویکسین کی تیاری 12 سے 18 ماہ میں مکمل ہوسکے گی۔مگر آکسفورڈ یونیورسٹی کی ٹیم کا کہنا ہے کہ ہر گزرتے ہفتے کے ساتھ ہم مزید ڈیٹا کا جائزہ لے رہے ہیں۔آکسفورڈ کی ٹیم دنیا بھر میں کام کرنے والے ان درجنوں ٹیموں میں سے ایک ہے جو ویکسین کی تیاری پر کام کررہی ہیں، مگر سارہ گلبرٹ کی ٹیم برطانیہ میں سب سے زیادہ پیشرفت کرچکی ہے۔برطانوی ہیلتھ سیکرٹری میٹ ہینکوک نے اسکائی نیوز کو کہا کہ پروفیسر سارہ گلبرٹ کا بیان امید کی کرن ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button