انٹرنیشنلشوبزشوبز

ہاروی وائنسٹن پر تیسرے مقدمے میں فرد جرم عائد

 

متنازعہ پروڈیوسر ہاروی 2 مقدمات کے تحت 23 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی

لاس اینجلس(ویوز نیوز)می ٹو مہم کے آغاز کا باعث بننے والے ہالی وڈ کے متنازعہ پروڈیوسر ہاروی وائنسٹن کو ریپ اور جنسی حملے کے 2 مقدمات کے تحت مارچ میں 23 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔اب ہاروی وائنسٹن کے خلاف ایک اور مقدمے میں لاس اینجلس میں فرد جرم عائد کی گئی ہے اور پراسیکیوٹرز کا کہنا ہے کہ ملزم کی نیویارک سے بے دخلی کے عمل کا آغاز کیا جارہا ہے، جہاں وہ 23 سال قید کی سزا کاٹ رہا ہے۔خیال رہے کہ ہاروی وائنسٹن میں گزشتہ دنوں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی مگر علاج سے صحتیاب ہوگئے اور اب نئے مقدمے میں مزید سزا سنائے جانے کا امکان ہے۔لاس اینجلس میں 68 سالہ پروڈیوسر کے خلاف پہلے ہی 2 خواتین کی جانب سے عائد ریپ اور جنسی حملے کے الزامات کے تحت فرد جرم عائد کی جاچکی ہے، دونوں خواتین کو اس جنسی استحصال کا سامنا فروری 2013 ءکو ہوا تھا۔پروڈیوسر کے ترجمان نے اس پر بات کرنے سے انکار کیا جبکہ ہاروی وائنسٹں کے وکلا سے رابطہ نہیں ہوسکا۔ہاروی وائنسٹن پر مذکورہ دونوں اہم الزامات سمیت مجموعی طور پر 100 کے قریب خواتین نے جنسی ہراسانی، جنسی استحصال اور ریپ کے الزامات لگا رکھے ہیں اور ان کے خلاف نیویارک اور لاس اینجلس کی عدالتوں سمیت دیگر امریکی عدالتوں میں بھی مقدمات زیر التوا ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button