اہم خبریںاہم خبریںپاکستان

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی کے سٹوڈنٹس کا مستقبل کرونا کے سبب بار بار امتحان ملتوی ہونے سے داؤ پر لگ گیا

لاہور( محمد عزیر علی )یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی کے سٹوڈنٹس کا مستقبل کرونا کے سبب بار بار امتحان ملتوی ہونے سے داؤ پر لگ گیا
تفصیلات کے مطابق یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی (2019-2014) کے طلبہ جن کا آخری سالانہ پیپر 13 مارچ 2020 کو ہونا تھا کرونا کے سبب ملتوی ہو گیا . اسکے بعد دو بار ڈیٹ شیٹ جاری کی گئی لیکن دونوں بار کرونا کے سبب ملتوی ہو گیا , ہر بار طلبہ نے پیپر کی سخت تیاری کی لیکن پیپر نہ ہو سکا . طلبہ سخت پریشانی اور مایوسی کا شکار ہیں کہ انہیں خومخواہ ہاسٹل کے اخراجات بھی ادا کرنے پڑ رہے ہیں اور پیپر ملتوی ہونے اور ڈگری نہ ملنے کے باعث جابز کا مسئلہ بھی درپیش ہے.
ڈاکٹر آف فزیکل ہیلتھ کے طلبہ کا کہنا ہے کہ ان کا وقت بھی ایم بی بی ایس کے طلبہ کی طرح قیمتی ہے جبکہ انہیں ترجیح نہیں دی جا رہی مزید یہ کہ وہ سپلی ہولڈر نہیں بلکہ وہ سٹوڈنٹ ہیں جن کا ایک آخری پیپر کرونا کے سبب ملتوی ہوا اور وہ بیچ ( 2019-2014) کے طلبہ ہیں اور ان کے بیچ کے ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس کے طلبا اپنی جابز پر جا چکے ہیں جبکہ وہ ابھی تک ایک پیپر کی تاخیر کی وجہ سے کھجور میں اٹکے ہوۓ ہیں لہٰذا  ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی کے تمام طلبا کو سابقہ ریکارڈ دیکھتے ہوۓ پروموٹ کیا جاۓ, ہوپ سرٹیفکیٹ جاری کیا جاۓ یا ترجیحی بنیادوں پر آن لائن یا کسی بھی طرح ان کا امتحان لیا جاۓ تاکہ وہ اپنے مستقبل کی راہ ہموار کر سکیں.

Related Articles

One Comment

  1. لاہور( محمد عزیر علی )یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی کے سٹوڈنٹس کا مستقبل کرونا کے سبب بار بار امتحان ملتوی ہونے سے داؤ پر لگ گیا
    تفصیلات کے مطابق یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی (2019-2014) کے طلبہ جن کا آخری سالانہ پیپر 13 مارچ 2020 کو ہونا تھا کرونا کے سبب ملتوی ہو گیا . اسکے بعد دو بار ڈیٹ شیٹ جاری کی گئی لیکن دونوں بار کرونا کے سبب ملتوی ہو گیا , ہر بار طلبہ نے پیپر کی سخت تیاری کی لیکن پیپر نہ ہو سکا . طلبہ سخت پریشانی اور مایوسی کا شکار ہیں کہ انہیں خومخواہ ہاسٹل کے اخراجات بھی ادا کرنے پڑ رہے ہیں اور پیپر ملتوی ہونے اور ڈگری نہ ملنے کے باعث جابز کا مسئلہ بھی درپیش ہے.
    ڈاکٹر آف فزیکل ہیلتھ کے طلبہ کا کہنا ہے کہ ان کا وقت بھی ایم بی بی ایس کے طلبہ کی طرح قیمتی ہے جبکہ انہیں ترجیح نہیں دی جا رہی مزید یہ کہ وہ سپلی ہولڈر نہیں بلکہ وہ سٹوڈنٹ ہیں جن کا ایک آخری پیپر کرونا کے سبب ملتوی ہوا اور وہ بیچ ( 2019-2014) کے طلبہ ہیں اور ان کے بیچ کے ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس کے طلبا اپنی جابز پر جا چکے ہیں جبکہ وہ ابھی تک ایک پیپر کی تاخیر کی وجہ سے کھجور میں اٹکے ہوۓ ہیں لہٰذا ڈاکٹر آف فزیکل تھراپی کے تمام طلبا کو سابقہ ریکارڈ دیکھتے ہوۓ پروموٹ کیا جاۓ, ہوپ سرٹیفکیٹ جاری کیا جاۓ یا ترجیحی بنیادوں پر آن لائن یا کسی بھی طرح ان کا امتحان لیا جاۓ تاکہ وہ اپنے مستقبل کی راہ ہموار کر سکیں.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button