انٹرنیشنلاہم خبریںاہم خبریں

آسیہ اندرابی بدنام زمانہ تہاڑجیل کے سخت ترین ‘سزا وارڈ ‘میں منتقل

 

سری نگر(ویب ڈیسک)مقبوضہ کشمیر کی خاتون علیحدگی پسند رہنما اور ‘دختران ملت’ کی چیئرپرسن آسیہ اندرابی اور ان کی دو ساتھی خواتین کو تہار جیل کے ‘سزا وارڈ’ میں منتقل کیا گیا ہے۔ساوتھ ایشین وائر کے مطابق مقبوضہ جموں و کشمیر کی علیحدگی پسند رہنما آسیہ اندرابی 2018 سے تہاڑ جیل میں قید ہیں جبکہ انہیں اور ان کی دو خاتون ساتھیوں ناہیدہ نسرین اور فہمیدہ صوفی کواین آئی اے نے عسکریت پسندوں کو فنڈنگ کرنے کے الزام میں یو اے پی اے ایکٹ کے تحت گرفتار کیا گیاتھا۔
آسیہ کے فرزند احمد بن قاسم نے ٹویٹ کرکے بتایا کہ میری ماں اور انکی دو خاتون ساتھیوں کو تہاڑ جیل کے سزا وارڈ منتقل کیا گیا ہے-انہوں نے مزید لکھا کہ اس وارڈ کی حالت انتہائی دردناک ہے اور قیدیوں کو سخت مشکلات سے گذرنا پڑتا ہے۔ میری ماں کی عمر 60 برس ہے جبکہ ناہیدہ نسرین 54 برس اور فہمیدہ صوفی 32 برس کی ہیں۔ یہ تینوں خواتین مختلف امراض میں مبتلا ہیں-
آسیہ اندرابی کشمیر کے پاکستان کے ساتھ الحاق کی حامی ہیں۔ زندگی کا کافی حصہ وہ بھارتی جیلوں میں گزار چکی ہیں۔ آسیہ اندرابی کشمیری خواتین کی تنظیم دختران ملت کی بانی ہیں۔ساوتھ ایشین وائر کے مطابق دختران ملت کشمیر کی بھارت سے علیحدگی کے لیے کام کرنے والی آل پارٹیز حریت کانفرنس کا حصہ ہے، جس کا بنیادی مقصد کشمیر کی بھارت سے علیحدگی ہے۔ آسیہ اندرابی کشمیر علیحدگی پسند خواتین میں سب سے اہم ہیں۔ ان کے حامی انہیں آئرن لیڈی کہتے ہیں۔آسیہ کے شوہر ڈاکٹر قاسم فکتو کو بھی جیل میں قید ہوئے 28 برس ہو گئے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button