انٹرنیشنلاہم خبریںاہم خبریں

توہین آمیز خاکوں کے خلاف کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو بھی میدان میں آگئے

اوٹاوا(ویوز نیوز)کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے کہا ہے کہ آزادی اظہار رائے بغیر حدود و قیود کے نہیں ہو سکتی اور اس سے مختلف برادریوں کی بلاوجہ اور جب دل چاہے دل آزاری نہیں کی جانی چاہیے۔

اوٹاوا(ڈیلی پاکستان آن لائن )کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے کہا ہے کہ آزادی اظہار رائے بغیر حدود و قیود کے نہیں ہو سکتی اور اس سے مختلف برادریوں کی بلاوجہ اور جب دل چاہے دل آزاری نہیں کی جانی چاہیے۔

بی بی سی اردو نیوز کے مطابق جسٹن ٹروڈو نے اس سلسلے میں مثال سے واضح کرتے ہوئے کہا کہ ایک سینیما ہال جو فلم بینوں سے بھرا ہوا ہو وہاں کسی شخص کو چیخ کر آگ آگ کہنے کی اجازت نہیں ہوتی۔فرانس کے صدر کے موقف سے اپنے آپ کو الگ کرتے ہوئے جسٹن ٹروڈو نے کہا کہ آزادی اظہار کا احتیاط سے استعمال ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ کثیر النسلی اور باادب معاشرے میں ہمیں اس بات کا احساس ہونا چاہیے کہ ہمارے الفاظ اور ہمارے افعال کا دوسرے پر کیا اثر پڑے گا اور خاص طور پر ان لوگوں اور برادریوں پر جو پہلے ہی سے بہت زیادہ امتیازی سلوک کا سامنا کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ معاشرہ ان نازک اور سنجیدہ موضوعات پر ذمہ دارانہ انداز میں بحث کرنے کو تیار ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button