صحت

خربوزے کے فوائد

لاہور(ویوز نیوز)

خربوزے کے مختلف رنگ ہوتے ہیں۔ زیادہ ترزردی مائل ہی ہوتا ہے۔ اس کا ذائقہ پھیکا شیریں ہوتا ہے۔ اس کا مزاج گرم اور تر ہوتا ہے۔ اس کی خوراک بقدر ہضم ہے۔ اس کے کئی فوائد ہیں۔
1۔ خربوزہ قبض کشا ہوتا ہے۔
2۔ یہ پتھری توڑتا ہے۔
3۔ خربوزہ پیشاب آور ہوتا ہے۔
4۔ اس کو اگر دوپہر اور شام کے کھانے کے درمیانی وقفہ میں کھایا جائے ،تو بدن کو موٹا کرتا ہے اور فرحت بخشتا ہے۔
5۔ گردہ مثانہ کی اصلاح کرتا ہے۔
6۔ اس کے چھلکوں کو رگڑ کر چہرے پر لیپ کرنے سے رنگ نکھر آتا ہے۔
7۔ اس کے چھلکوں کا نمک درد گردہ کی دواؤں میں ڈالا جاتا ہے۔
8۔ خربوزہ کے تخم پیشاب آور ادویہ میں استعمال کئے جاتے ہیں۔
9۔ مغز تخم خربوزہ جگر کے ورم، گردہ و مثانہ کے ورم کو درست کرتے ہیں۔
10۔ یرقان اور جلندر کو بے حد مفید ہوتا ہے۔
11۔ خربوزے کو نہار منہ استعمال کرنا چاہئے ورنہ صفراوی بخار لاتا ہے۔
12۔ مغز تخم خربوزہ طبیعت کو نرم کرتا ہے۔
13۔ خربوزہ کے چھلکے کا آنکھوں پر ضماد آنکھوں کی سرخی کو دور کرتا ہے۔
14۔ خربوزہ بدن میں فاضل تیزابیت مادوں کو پیشاب اور پسینے کے راستے خارج کرتا ہے۔
15۔ کھٹے ڈکار آتے ہوں، تیزابیت کی زیادتی کی وجہ سے منہ میں چھالے ہوں، سینے میں جلن ہوتی ہو تو خربوزے کھانا انتہائی مفید ہوتا ہے۔
16۔ خربوزے کا متواتر استعمال عام جسمانی کمزوری کو دور کرتا ہے۔
17۔ یرقان، بلڈپریشر میں بہت فائدہ دیتا ہے۔
18۔ عورتوں کے ایام میں کمی اور بے قاعدگی میں خربوزہ کا استعمال بے حد مفید ہوتا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button