پاکستانکالم و مضامین

ماحولیات اور جمالیات

پروگرام : ادب نامہ
پروڈیوسر : فریحہ کنول
مہمان خصوص : چیف کارپوریشن آفیسر جناب خالقداد گاڑا
موضوع گفتگو : ماحولیات اور جمالیات
میزبان : منزہ انور گوئیندی
شرکائے گفتگو : ممتاز عارف ، صفدر بھٹی ، ارشد محمود ارشد ، عبدللہ نعیم رسول ، اسامہ منیر
رپورٹ رابعہ بصری

پروگرام ادب نامہ میں شعرا و ادبا کے ذوق جمالیات پر ماحول کی اثر پذیری کے حوالے سے گفتگو میں منزہ انور گوئیندی نے دور گذشتہ کے حوالے سے بات کرتے ھوئے کہا کہ ان کے والد انور گوئیندی اپنے رسالہ کامران میں ” میرا شہر کے عنوان سے سرگودھا کی صفائی کے انتظامات کے حوالے سے کالم لکھا کرتے جس کا مقصد یہ تھا کہ ماحول کی آلودگی ادیبوں اور شاعروں کے اذہان کو پراگندہ کرتی ھے اور ان کی تحاریر میں نفاست و شائستگی اسی وقت رونما ھو سکتی ھے جب ارد گرد کا ماحول خوبصورت و دلنشیں ھو ،

مختلف سوالات کے جواب دیتے ہوئے جناب خالقداد گاڑا نے کہا میٹرو پولٹین سرگودھا کے بہت سے معاملات بہتر کی طرف جا ریے ہیں ہم نے کارپورش کئی سالوں سے پینڈنگ ٹیکس وصول کرنے شروع کر دئیے ہیں مارکیٹوں اور پلازہ کو سیل کیا گیا ہے جن کے ذمے واجبات تھے۔ صفائی کے نظام میں بہت بہتری آئی ہے ہمارے پاس عملہ و سامان کی قلت کے باوجود بھی بہتر نتائج سامنے آئے ہیں ۔ عیدِ قرباں پر آلائشوں کو ٹھکانے لگانے کے انتظامات کر لیے گئے ۔

تاہم شہریوں کا بھی فرض بنتا ہے کہ وہ کارپوریش کے عملہ کے ساتھ مکمل تعاون کریں ۔ دوکاندار حضرات کو چاہئیے کہ وہ رات کو جب شٹر ڈاؤن کرنے لگیں تو شاپ کی صفائی کر کے کوڑا کسی شاپنگ بیگ میں ڈال کر ایک طرف رکھ دیا کریں ۔

ممتاز عارف نے کہا کہ اس حوالے سے اب بھی اخبارات میں لکھا جاتا ھے کہ شہر کو صاف رکھنے میں میٹرو پولیٹن کا کردار نہائت اھم ھے انہوں نے گاڑا صاحب سے کہا کہ شہر کے اھم مقامات کو خوبصورت بنایا جائے اور پوسٹرز لگائے جانے کی اجازت نہ دی جائے، صفدر بھٹی نے کہا کہ انگریز شعرا نے ماحول کی خوبصورتی کو بہت اہمیت دی ھے اور فطرت پر بہت کچھ لکھا گیا ھے ،

ارشد محمود ارشد نے کہا کہ شاعری کی بنیاد ھی حسن نظر ھے اور صاف ستھرا ماحول قلب و نظر پر اچھا اثر ڈالتا ہے ۔ گاڑا صاحب کی سرگودھا تعناتی کے بعد تجاویزات کے حوالے سے کافی بہتری آئی ہے اور اب بازار پہلے سے کافی کشادہ دکھائی دیتے ہیں ، نعیم رسول نے کہا کہ فطرت کے عناصر کی خوبصورتی کو شاعری مزید نکھار دیتی ھے اسامہ منیر نے کہا کہ ادیب اور شاعر معاشرے کے نباض ھوتے ھیں اور خوبصورتی سے متاثر ھوئے بغیر نہیں رہ سکتے نہ ھی لکھ سکتے ھیں اس حوالے سے صفدر بھٹی ، ارشد محمود ارشد ، نعیم رسول ، اور اسامہ منیر نے اپنا کلام سنایا ، منزہ انور گوئیندی نے اپنے والد انور گوئیندی کی نظم ( نرس ) سنائی جو ماحول سے متاثر ھو کر لکھی گئی تھی پروگرام کے بعد سرگودھا کے نوجوان شاعر ارشد محمود ارشد نے جناب خالقداد گاڑا کو اپنا چوتھا شعری مجموعہ ” بساطِ زیست ” بھی پیش کیا

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button